حامد میر نے اپنے آپ کو حوالے کرنے کی پیشکش کر دی، مگر شرط ایسی کہ حکومت اور آرمی سر پکڑ بیٹھ گئی۔

حالیہ پاکستان میں صحافی کے ساتھ ہونے والے معاملے کے بعد، ملک میں صحافیوں کو لے کر عجیب سا ماحول چھڑ گیا ہے۔ اس ماحول کو پروان چراہنے میں، پاکستان کے مشہور صحافی حامد میر نے کوئی کثر نا چھوڑی۔ جس کے رد عمل میں حکومت نے ان کے جیو نیوز کے پروگرام پر پابندی لگا دی۔

تاذہ ترین صورتحال کے مطابق، حامد میر نے بذریعہ سوشل میڈیا یہ آگاہ کیا وہ حکومت کے آگے اپنے آپ کو پیش کر دینگے لیکن ان کی ایک شرط ہے اور شرط یہ ہے کہ حکومت پہلے ان لوگوں کو پکڑیں جنہوں نے اسد علی طور کے ساتھ غیر مناسب معاملہ کیا۔

آپ کو بتاتے چلے کہ اسد علی طور کے ساتھ کچھ لوگوں نے جاہلانہ حرکت کی، جس کے بعد صحافی برادری عمل میں آئی اور احتجاج کیا۔

Advertisement

اس احتجاج میں حامد میر نے واضح کردار ادا کیا اور وہاں پر واضح طور پر آرمی کو تنقید کا نشانہ بنایا اور کہاں کہ اگر آرمی کے لوگ ان حرکتوں سے باز نا آئے تو وہ جنرلوں کے گھروں کی کہانیاں سب کو بتا دینگے۔

اس پر انہوں نے مزید کہا کہ وہ جنرل رانی کی کہانی سب کو بتا دینگے کہ اس نے کیا کچھ کیا اور اس کے کہنے پر کیا کچھ ہوتا رہا؟

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *