شہباز شریف کے لئے نیا پیغام آگیا، نواز لیگ میں نئی کھلبلی

شہباز شریف 22 جون کو ایف آئی اے کے دفتر میں حاضر ہوں گے۔

ایف آئی اے جعلی اکاؤنٹ بنانے میں ملوث ہونے کی تحقیقات کی ہیں۔

مسلم لیگ ن کے رہنما شہباز شریف کو بتایا گیا ہے کہ وہ 22 جون کو فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی کے دفتر میں پیش ہوں۔ ان پر رمضان اور العربیہ شوگر ملز میں منی لانڈرنگ کا الزام عائد کیا گیا ہے۔

Advertisement

شہباز پر الزام ہے کہ انہوں نے غریب ملازمین کے نام پر جعلی اکاؤنٹ کھولے جب وہ پنجاب کے وزیر اعلیٰ کی حیثیت سے خدمات انجام دے رہے تھے۔ ان پر 2008 سے 2012 تک شریف اکاؤنٹ میں 25 ارب روپے کی منتقلی کے لئے یہ اکاؤنٹس استعمال کرنے کا الزام ہے۔

ایف آئی اے نے اپنے نوٹس میں ان سے چار سوالات پوچھے تھے۔ اس میں ملازمین کے کھاتوں میں رقم کی منتقلی ، اس میں وزیر اعلیٰ کے سیکرٹریٹ کے کردار ، شہباز کے بیٹے سلمان شہباز کی مطابقت اور خاندانی اثاثوں کے بارے میں دریافت کیا گیا ہے۔

لاہور میں قومی احتساب بیورو نے 14 جون کو اس مقدمے کی کارروائی 8 جولائی تک مؤخر کرنے کی استدعا منظور کرلی۔

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *