کئی ملازموں کی چھٹی کروانے کا فیصلہ کر لیا گیا، لیکن کیوں، جانئے تفصیل

سندھ عوامی اور نجی ملازمین کوویڈ ۔19 کی ویکسین نہ لگوانے پر نوکریوں سے نکالنے کا فیصلہ۔

جولائی میں حفاظتی ٹیکوں کے اعلان کی آخری تاریخ۔

سندھ کے وزیر اطلاعات و ٹیکنالوجی تیمور تالپور نے بدھ کو متنبہ کیا کہ سندھ میں ناول کوروناوائرس کے ٹیکے نہیں لینے والے افراد کو ملازمت سے برطرف کردیا جائے گا۔

Advertisement

انہوں نے سماء ٹی وی کے پروگرام نیا دین بدھ کے روز بتایا ، “نہ صرف ان لوگوں کے موبائل سم کارڈ بلاک کردیئے جائیں گے بلکہ ان لوگوں کو شوکاز نوٹسز بھی جاری کیے جائیں گے۔

تالپور نے واضح کیا کہ حکومت نے قطرے پلانے کے لئے کسی آخری تاریخ کا اعلان نہیں کیا ہے لیکن لوگوں کو جلد سے جلد حفاظتی ٹیکے لگانے چاہئیں۔

انہوں نے کہا ، “ہم ممکنہ طور پر جولائی کے پہلے ہفتے تک ایک ڈیڈ لائن کا اعلان کریں گے۔
سرکاری ملازمین کی تنخواہوں کو ان کے قطرے پلانے سے پہلے ہی منسلک کردیا گیا ہے۔ کوئی بھی عوامی کارکن جس کو COVID-19 شاٹ نہیں ملتا ہے اسے تنخواہ نہیں ملے گی۔

Advertisement

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کراچی کے ایکسپو سنٹر میں جعلی ویکسی نیشن سرٹیفکیٹ تقسیم کرنے کا نوٹس لیا تھا۔ انہوں نے وزارت داخلہ اور سندھ کے انسپکٹر جنرل کو ہدایت کی کہ وہ ان کے خلاف سخت کارروائی کریں۔

شاہ نے متنبہ کیا کہ جو بھی اس ویکسین کے بارے میں غلط معلومات پھیلاتا ہے اسے سزا دی جائے گی۔

حکومت کے اعدادوشمار کے مطابق ، پاکستان نے کوویڈ 19 ویکسین کے 10 ملین سے زیادہ خوراکوں کا ایک اہم سنگ میل حاصل کرلیا ہے۔

Advertisement

فی الحال ، 300،000 سے 35،000،000 افراد روزانہ کی بنیاد پر ویکسین کے لئے اندراج کر رہے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *