Headlines

    کابل کی فتح میں پاکستان کا کردار ۔۔۔

    کابل (ویب ڈیسک) افغان تالبان کے ترجمان ذبیح اللہ کا کہنا ہے کہ سوویت دور سے پاکستان کے خلاف منفی پراپیگنڈا کیا جا رہا ہے۔ پاکستان افغانستان میں
    کوئی مداخلت نہیں کرتا، تالبان کے کابل فتح کرنے میں پاکستان کا کوئی کردار نہیں ہے، کابل اپنے زور بازو سے فتح کیا ہے،

    پاکستان سے تعلقات کی بنیاد پراپیگنڈے پر نہیں اصولوں کی بنا پر ہوگی۔نجی ٹی وی اے چینل کو دیے گئے انٹرویو میں ذبیح اللہ نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر پر بھارت کو مثبت رویہ اپنانا چاہیے۔ بھارت کو کشمیریوں کو ان کا حق خود ارادیت دینا ہوگا، افغانستان کے عوام کشمیریوں کے شانہ بشنانہ کھڑے ہیں۔انہوں نے واضح کیا کہ

    بھارت یا کسی بھی دوسرے ملک کو افغانستان کی داخلی پالیسی میں مداخلت کی اجازت نہیں دیں گے۔ بھارت خطے کا اہم ملک ہے، اس سے بھی اچھے تعلقات چاہتے ہیں لیکن وہ منفی پراپیگنڈے سے باز رہے، بھارت افغان عوام کے مفادات کے مطابق اپنی پالیسی وضع کرے۔ذبیح اللہ کا کہنا تھا کہ پاکستان ہمارا دوسرا گھر ہے، اس کے خلاف افغان سرزمین استعمال نہیں ہونے دیں گے، نہیں لگتا کہ

    Advertisement

    اب پاکستان مخالف کوئی تنظیم افغانستان میں موجود ہے، اگر کسی تنظیم نے پاکستان میں گڑ بڑ کی کوشش کی تو اسے روکیں گے۔تالبان ترجمان کا کہنا تھا یہ مناسب نہیں ہوگا کہ عالمی دنیا ہمیں تسلیم نہ کرے، دنیا افغان عوام کی خواہشات کا احترام کرے، ہمیں بڑی تعداد میں افغانوں کی حمایت حاصل ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمارا تجربہ اور قوت پہلے سے زیادہ ہوگئی ہے، حکومت سازی امریکی انخلا سے پہلے مکمل کرلی جائے گی، امید ہے کہ سب افغانستان کی بہتری کیلئے مل کر چلیں گے۔