پھول مکھانا شوگر کا قدرتی علاج اور اس کی 10 زبردست خوبیاں

پھول مکھانا صدیوں سے بطور ہلکی پھلکی غذا جو بلا وجہ کی بھوک کو مٹاتی ہے استعمال ہو رہا ہے اور اس کی ادویاتی خوبیوں کی وجہ سے چین کے قدیم طریقہ علاج میں اسے بڑی اہمیت دی جاتی ہے، مکھانے میں تلی اور گُردوں کو تقویت دینے کے لیے بہترین غذائی صلاحیت ہے اور یہ سارے جسم کی صحت پر انتہائی اچھے اثرات مرتب کرتا ہے۔

 

 

Advertisement

اس آرٹیکل میں پھول مکھانے کے 10 ایسے فائدے شامل کیے جارہے ہیں جنہیں جان کر آپ اس زبردست کھانے کو اپنی خوراک میں شامل کرنا چاہیں گے۔

 

 

Advertisement

غذائی صلاحیت
پروٹین اور فائبر سے بھرپور مکھانے کے صرف 100 گرام میں 9.7 گرام پروٹین اور 14.5 گرام غذائی فائبر پائی جاتی ہے اسکے علاوہ اس میں کیلشیم کی بڑی مقدار کے ساتھ ساتھ میگنیشیم، پوٹاشیم، فاسفورس جیسے اہم منرلز اور چند وٹامنز بھی پائے جاتے ہیں اور اسکے ہر 100

 

 

Advertisement

گرام میں 347 کیلوریز موجود ہوتی ہیں۔

صحت کے لیے 10 فائدے

 

Advertisement

1. مکھانا جسے فوکس نٹ بھی کہا جاتا ہے پروٹین مہیا کرنے کا زبردست ذریعہ ہے اسی لیے سمجھدار لوگ اسے ناشتے میں کھانا پسند کرتے ہیں تاکہ پروٹین سے حاصل ہونے والی طاقت سارا دن جسم کو توانائی مہیا کرے اور ساتھ ہی یہ پیٹ کو بھرا رکھتا ہے اور زیادہ کیلوریز نہ ہونے کے باعث موٹاپا پیدا نہیں کرتا۔

 

 

Advertisement

2۔ مکھانے کو ماہرین اینٹی ایجینگ یعنی صدا جوان رکھنے والے کھانوں میں شمار کرتے ہیں کیونکہ اس میں خاص اینٹی آکسائیڈینٹ پائے جاتے ہیں جو جسم پر پڑنے والے عُمر کے اثرات کو سُست کر دیتے ہیں اور جلد کو توانا اور چمکدار بناتے ہیں۔

3۔ شوگر اور دل کے مریضوں کے لیے مکھانا ایک زبردست خوراک ہے کیونکہ اس میں صحت کے لیے مفید چکنائی پائی جاتی ہے اور ساتھ ہی فائبر کی بڑی مقدار جہاں خون میں شوگر کو تیزی سے شامل ہونے سے روکتی ہے وہاں انسولین کی پیداوار بڑھاتی ہے اورنظام انہظام کو بہتر بناتی ہے جس سے دل کو بھی تقویت حاصل ہوتی ہے۔

 

Advertisement

 

4۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ ہر مرد کو روزانہ کم از کم 35 گرام غذائی فائبر استعمال کرنی چاہیے اور یہ مقدار خواتین کے لیے 27 گرام ہے اور مکھانے کے صرف 100 گرام میں 14.5 گرام فائبر کی موجودگی اسے ہمارے ڈائجیشن سسٹم کے لیے ایک کراماتی غذا بنا دیتی ہے یہ قبض سے بچاتی ہے اور پیٹ کی صفائی کر دیتی ہے۔

 

Advertisement

 

 

5۔ اگر جسم سے فاسد مادوں کو خارج کرنا ہو تو مکھانا ایک زبردست غذا ہے یہ خون کے سُرخ خلیوں کو ٹھیک کرنے میں مدد دیتا ہے اور تلی کے لیے انتہائی مفید ہے۔ تلی میں جسم کے مُردہ سیلز اکھٹے ہوتے ہیں اور اس میں بلڈ سیلز کے علاوہ پیٹلیٹس بھی سٹور ہوتے ہیں اور یہ ہماری قوت مدافعت کو مضبوط رکھنے میں اہم کردار ادا کرتی ہے۔

Advertisement

 

 

6۔ فرٹیلٹی کو بڑھانے کے لیے مکھانا جادوئی کھانا ہے یہ مردوں میں پائی جانی والی کمزوری کا قدرتی علاج ہے اور وقت سے پہلے ڈسچارج ہونے سے روکتی ہے اور سمنز کی مقدار بڑھاتی ہے اور ایسی خواتین جن میں حمل نہ ٹھہرتا ہو اُن کے لیے کسی اکسیر سے کم نہیں۔

Advertisement

 

 

 

Advertisement

7۔ فوکس نٹ کم گلیسمیک انڈیکس والے کھانوں میں شامل ہے یعنی اس میں موجود گلوکوز خون میں تیزی سے شامل نہیں ہوتی اور اس کی یہ خوبی جہاں ذیابطیس کے لیے مفید ہے وہاں اس سے پیٹ بھرا رہتا ہے اور اسے کھانے سے جلدی بھوک محسوس نہیں ہوتی۔

 

 

Advertisement

 

8۔ ایسے افراد جنہیں گندم اور کسی اور اناج جس میں گلوٹن ہوسے الرجی ہوجاتی ہے اُن کے لیے مکھانا بہترین کھانا ہے کیونکہ اس میں گلوٹن شامل نہیں ہوتی اور اسکے باوجود یہ پروٹین اور فائبر سے بھرپور ہوتا ہے۔

 

Advertisement

 

9۔ میگنیشیم اور پوٹاشیم سے بھرپور مکھانے میں سوڈیم بہت ہی کم مقدار میں پائی جاتی ہے اس لیے یہ وزن کم کرنے کے لیے سُپر فوڈ ہے اور میگنیشیم اور پوٹاشیم میں ہائی اور کم سوڈیم والے کھانے دل کے مریضوں کے لیے بھی سپُر فوڈ مانے جاتے ہیں کیونکہ ایسے کھانے ذہنی تناؤ کو ختم کرتے ہیں اور بلڈ پریشر کو نارمل رکھتے ہیں اور سارے جسم کی صحت پر اچھے اثرات مرتب کرتے ہیں۔

 

Advertisement

 

 

نمبر 10: فوکس نٹ میں قدرتی طور پر ایسے کیمیا پائے جاتے ہیں جو جسم میں سوزش کے خلاف انتہائی معاون ثابت ہوتے ہیں اور جسم میں اعضا کی سوزش بیشمار بیماریوں کو دعوت دیتی ہے جن میں ذیابطیس، جوڑوں کا درد وغیرہ سرفہرست ہیں اور چونکہ اس میں اینٹی بیکٹریل خوبیاں بھی پائی جاتی ہیں چنانچہ یہ ہمارے جسم کو انفیکشن سے بچاتا ہے۔

Advertisement

 

 

زیادہ مقدار میں کھانے سے ہونے والے نقصانات
اگر اسے بہت زیادہ مقدار میں کھایا جائے تو یہ نظام انہظام کو متاثر کرسکتا ہے خاص طور پر ایسے موقع پر قبض پیدا ہوجاتی ہے، ذیابطیس کے مریضوں میں شوگر کا لیول کم ہوسکتا ہے اور کُچھ لوگوں کو اس سے الرجی ہوجاتی ہے اس لیے اسے زیادہ مقدار میں استعمال نہ کریں اور 100 گرام سے اوپر نہ کھائیں۔

Advertisement

 

 

Advertisement

Recent Posts

حرمت مسارت: کیا باپ کی بیٹی کو غلطی سے چھو لینے سے طلاق واقع ہو جاتی ہے ؟

کیا شوہر کی چھوٹی سی غلطی بن سکتی ہے طلاق کی وجہ، اسلام میں اس… Read More

1 day ago

گوند کتیرا اگر آپ کے گھر میں نہیں تو آپ کی ہڈیوں کی مخ بھی نہیں رہنے والی، جانئے کیسے

گوند کتیرا ہڈیوں کو مضبوط بنانے میں بہترین ساتھی،کمزور لوگ اب پریشان ہونا چھوڑ دیں… Read More

2 days ago

گردوں کے کینسر کا ایسا علاج جس کی تلاش ہر نظر کو،ناصرف گردے صحت مند بلکہ پورا جسم تندرست ہوجائے

گردوں کے کینسر کا ایسا علاج جس کی تلاش ہر نظر کو، ناصرف گردے صحت… Read More

3 days ago