مسلم لیگ ق کو 5 سیٹوں کے بدلے کوئی وزارت نہیں مل سکتی اگر یہ چاہتے ہیں کہ ان کو وزارت محض 5 سیٹوں کے بدلے ملے تو یہ سراسر نا انصافی ہے، نواز لیگ اگر دیتی ہے تو ان سے لے لے” پرویز خٹک کے اس بیان کی حقیت جان کر آپ حیران رہ جائینگے

    مسلم لیگ(ق) کے حوالے سے کسی قسم کا بیان جاری نہیں کیا ۔ پرویز خٹک۔

     

     

    Advertisement

    سوشل میڈیا کے اس دور سے پہلے پہل تو لوگ ذاتی طور پر اس کو وقت گزاری کے لئے استعمال کرتے تھے۔ لیکن جیسے جیسے دور ترقی کی جانب گامزن ہے سوشل میڈیا سائٹس کا استعمال آپسی لڑائیوں کے لئے ہونے لگا اور اب یہ اس حد تک بڑھ چکا ہے کہ سیاست دانوں کی سیاسی لڑائی کا بہتر ین ذریعہ بنتا جا رہا ہے۔

     

     

    Advertisement

    آئے روز کبھی کسی کی جانب سے بیان جاری ہو تا ہے اور تو کبھی کسی دوسری جانب سے۔ ایسے مواقع سے فائدہ صحافی اُٹھاتے ہیں کچھ ایسے سنئیر صحافی ہیں جو بڑے بلندو بانگ دعوے کر تے نظر آتے ہیں۔

     

     

    Advertisement

    اسی طرح کچھ روز قبل وزیر دفاع کی جانب سے مسلم لیگ ق کے حوالے سے ایک بیان منظر عا م پر آیا۔
    مسلم لیگ ق کو 5 سیٹوں کے بدلے کوئی وزارت نہیں مل سکتی اگر یہ چاہتے ہیں کہ ان کو وزارت محض 5 سیٹوں کے بدلے ملے تو یہ سراسر نا انصافی ہے ۔

     

     

    Advertisement

    مسلم لیگ ن اگر ان کو دیتی ہے تو ان سے وزارت لے لیں پاکستان تحریک انصاف کو تو معاف رکھیں۔ اس بیان کے بعد مسلم لیگ ق و تحریک انصاف کے درمیان کشیدگی بڑھ گئی ۔

     

     

    Advertisement

    آج وزیر دفاع پرویز خٹک نے اپنے سوشل میڈیا اکاؤ نٹ سے بذریعہ ٹوئٹ ایک پیغام جاری کیا ہے کہ ان کی جانب سے مسلم لیگ ق کے لئے جو بیان پھیلا یا جا رہا ہے وہ انھوں نے نہیں دیا۔ یہ سب اختلافات پیدا کرنے کے لئے کیا جارہا ہے۔

     

     

    Advertisement

    اور اس میں میرا نام استعمال کیا جا رہا ہے۔ مزید کہا کہ یہ خبر بالکل بے بنیاد ہے اور کسی نے خود سے بنائی ہے۔

     

     

    Advertisement

    وزیر دفاع نے کہا مسلم لیگ ق اور پاکستان تحریک انصاف کا آپس میں اتحاد ہے اور اس اتحاد کو تحریک عدم اعتماد بھی ختم نہیں کر سکی۔ یہ بیان کسی کی شرارت ہے ۔ مسلم لیگ ق نے ایسے کڑے وقت میں وزیر اعظم کا ساتھ دیا ہے کہ جب اسمبلی میں ووٹوں کے لئے جو ڑ توڑ کئے جار ہے ہیں۔

     

     

    Advertisement

    پاکستان تحریک انصاف کے اراکین بھی مسلم لیگ ق کے چوہدری بردارن کے ساتھ کھڑے ہیں۔ وزیر دفاع پرویز خٹک کے اس بیان کے بعد مسلم لیگ ق کے مونس الہٰی نے ان کا شکریہ ادا کیا کہ انھوں نے خود سے متعلق بیان کی تردید کی اورساتھ وضاحت دیتے ہوئے مسلم لیگ ق کے لئے اطمینان کا اظہار کیا ہے۔

     

     

    Advertisement

    دوسری طرف، شیخ رشید نے دعوی کیا کہ اب اگلے 24 گھنٹے میں ہر گھنٹے بعد اپوزیشن کو سرپرائز دیا جائے گا۔

     

     

    Advertisement

    جبکہ اس سے پہلے مولانا فضل الرحمان اور بلاول زرداری بھی اس سے پہلے وقت کا الٹیمیٹم دے چکے ہیں ۔

     

     

    Advertisement

    اسی طرح پیپلز پارٹی کی طرف سے آغاز کی جانے والی ریلی کا ابھی تک کوئی واضح مقصد نہیں آیا، اس کے برعکس ان کی ریلی کا اب نام و نشان بھی نظر نہیں آرہا ہے ۔

     

     

    Advertisement

    حکومت اور اپوزیشن دونوں کی طرف سے دعوی کیا جا رہا ہے کہ ان کی سیٹوں کی تعداد پوری ہیں لیکن اس کا فیصلہ اب اسمبی حال میں ہی ہوگا۔

     

     

    Advertisement