گورنر سنھ نے کراچی کے لوگوں کے بارے میں بڑا فیصلہ کر دیا۔ تنازعات سامنے آگئے

    کراچی: گورنر سندھ عمران اسماعیل نے کہا کہ شہر میں حالیہ بارشوں کے سبب ہونے والے کی وجہ سے وفاقی حکومت کراچی میں آرٹیکل 149 نافذ کرسکتی ہے۔

    آرٹیکل کے مطابق، وفاقی حکومت، صوبوں میں اپنے اختیارات کو استعمال کرنے کے لئے ، مخصوص معاملات میں صوبوں کو ہدایات دے سکتی ہے۔

    آرٹیکل 149 (3) اور آرٹیکل 149 (4) کے تحت وفاقی حکومت صوبوں کو مواصلات کے ذرائع تعمیر اور ان کی دیکھ بھال کے ساتھ ساتھ پاکستان کی امن، سکون اور معاشی زندگی کے حوالے سے بہتری کے بارے میں ہدایات دینے میں توسیع بھی کرسکتی ہے۔

    Advertisement

    جیو نیوز کے پروگرام ‘آج شاہ زیب خانزادہ کے ساتھ’میں گفتگو کرتے ہوئے گورنر نے وارننگ دی کہ کراچی ملک کے بہترین شہروں میں شامل ہوتا تھا۔ اور مرکزی حکومت کراچی کے اس مقام کو ختم نہیں ہونے دے گی۔

    مزید پڑھیں : میرے سوال کا جواب دے دیں تو میں مسلمان ہو جائونگا‘‘ اسرائیلی یہودی کا مولانا طارق جمیل کو چیلنج۔۔

     

    Advertisement

    انہوں نے کہا کہ کراچی کے لئے منظم اور مربوط حکمت عملی تیارکی جا رہی ہے، جس کے لئے وفاق، صوبائ حکومتیں اور مقامی لو گ مل کر لام کرے گی۔

    اسماعیل نے کہا کہ اگر اس ڈھانچے پر اتفاق نہیں ہوا، تو پھر آرٹیکل 149 نافذ کی جاسکتی

    گورنررہے، تاہم انہوں نے مزید کہا کہ فی الحال ایسی کسی تجویزی پر غور نہیں کیا جارہا ہے، جس سے شہر مسائل پیسا ہو۔

    Advertisement

    انہوں نے مزید کہا کہ سپریم کورٹ کراچی کے معاملات حل کرنے کے لئے بھی کارروائی کر سکتی ہے۔

    دوسری طرف، حکومت سندھ کے ترجمان مرتضی وہاب نے وضاحت کی کہ صوبائی قیادت وفاقی حکومت کے ساتھ تعاون کے لئے تیار ہے۔

    انہوں نے کہا کہ کراچی کے مسائل حل کرنا انکی ترجیح ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اگر وہ انہیں فنڈز مہیا کرتی ہے تو وہ وفاقی حکومت کے ساتھ مل کر کام کرنے کے لئے تیار ہیں۔

    Advertisement

    وہاب نے مزید اس بات پر بھی زور دیا کہ شہر کے ساحلی اور صنعتی علاقوں کو نئ سڑکوں کی ضرورت کے ساتھ ساتھ موجودہ سڑکوں کو مرمت کرنے کی بھی ضرورت ہے۔”