کرونا کا ایک اور نقصان سامنے آگیا، نئی تحقیق کے نتائج سامنے آگئے

    کرونا کا ایک اور نقصان سامنے آگیا، نئی تحقیق کے نتائج سامنے آگئے

     

     

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

     

    ایک نئی تحقیق سے پتا چلا ہے کہ ڈاکٹر اکاش شکلا, شوبہ ہیپاٹالوجی, سر ایچ این, رلائنس فاؤنڈیشن ہاسپٹل اینڈ ریسرچ سینٹر کا کہنا یہ ہے

     

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

    کہ وائرس ان خلیوں کے ساتھ خاص تعلق رکھتا ہے جو جگر کے اندر اور باہر بائل ڈکٹ کو لائن کرتے ہیں.

     

     

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

    تحقیق کے مطابق اس بات کا ثبوت ملا ہے کہ  COVID جگر کی سختی میں اضافے کا باعث بنتی ہے اور طویل مدتی چوٹ کا باعث بن سکتا ہے.

     

     

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

     

     

    ریڈیولوجیکل سوسائٹی آف نارتھ امریکہ کے سالانہ اجلاس میں نتائج پیش کرتے ہوئے, فیروزہ حیدری جو جنرل اسپتال میں پوسٹ ڈاکٹریٹ ریسرچ فیلو ہیں  کا کہنا ہے

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

     

    کہ ہمارا مطالعہ بھرتے ہوئے شواہد کا حصہ ہے کہ COVID انفیکشن جگر کی چوٹ کا باعث بن سکتا ہے جو شدید بیماری کے بعد اچھی طرح سے رہتا ہے.

     

    Advertisement