متحدہ جماعتی کانفرنس (اے پی سے) کا ایکشن پلان سامنے آگیا، تحریک انصاف کی نیندیں اُڑ گئ۔

اسلام آباد (اعتماد نیوز) پاکستان تحریک انصاف کے خلاف تمام اپوزیشن پارٹی نے کٹھ جوڑ کر لیا، جس کی وجہ سے ایواںوں میں اور پاکستان کی سڑکوں پر بھی احتجاج کی شکل میں ہل چل متوقع ہے۔

تفصیلات کے مطابق، اے پی سی نے سب سے پہلے تو سلیکٹڈ وزیراعظم عمران خان کو مستعفی ہونے کا مطالبہ کیا ہے۔ قائد حزب اختلاف نے کہا ہے کہ پاکستان کی خوشحالی کے لئے، عمران خان کا استعفی بہت ضروری ہے۔

آل پارٹی کانفرنس نے یہ بھی اعلان کیا ہے کہ اب ملک گیر احتجاج کا سلسہ شروع کیا جائے گا۔ اس احتجاج میں تمام شعبہ سے منسلک لوگوں کو شامل کیا جائے گا، جس میں کسان، مزدور، وکیل، ڈاکٹر اور مزدور شامل ہونگے۔

Advertisement

پہلے مرحلے میں، اکتوبر 2020 میں صوبہ سندھ، بلوچستان، خیبر پختنخواہ اور پنجاب میں مشترکہ جلوسوں اور ریلیوں کا اہتمام کیا جائے گا۔

اس کے بعد، دسمبر 2020 میں پورے ملک میں عوام الناس کے ساتھ مل کر ملگ گیر احتجاج کیا جائے گا۔

آخری درجہ پر، جنوری 2020 میں، تمام اپوزیشن کی جماعتیں مل کر اسلام آباد کی طرف لانگ مارچ کرے گی، جو کہ فیصلہ کن ہوگا اور وزیراعظم عمران خان کا استعفی لے کے ہی اٹھے گا۔

Advertisement

اس کے ساتھ ساتھ، متحدہ پارٹی کانفرنس نے یہ بات بھی واضح کی وہ مل کر آئینی حربے بھی استعمال کرسکتے ہیں، جس میں عدم اعتماد کی تحریک اور مناسب وقت پر مل کر تمام اپوزیشن کا قومی اعوان سے مستعفی ہونا شامل ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *