اسرائیلی سفیر کے پاکستان کے بارے میں اہم انکشافات سا منے آگئے، وہی ہوا جس کا ڈر تھا۔۔

لاہور (نیوز ڈسک) اسرائیل کے پاکستان کے ساتھ تعلق کے حوالے سے بہت سے افواہیں چل رہی ہے کہ پاکستان اسرائیل کو تسلیم کرنے کے لئے کام کر رہا ہے، جبکہ دوسری جانب پاکستان کے وزیراعظم نے کہا ہے کہ حکومت اسرائیل کو تسلیم نہیں کرے گی۔

حال میں ہی ہونے والے ایک انٹرویوں میں، اسرائیل کے امریکہ میں سفیر رون ڈیمرن صاحب نے اہم انکشافات کئے ہے۔ سفیر نے بتایا کہ اسرائیل کی عوام پاکستان کو بُرا نہیں سمجھتی اور نا ہی اسرئیلی حکومت پاکستانی عوام کو بُرا سمجھتی ہے۔ اس نے کہا کہ دونوں مُلکوں کے درمیاں کوئی سرحدیں تنازعہ بھی نہیں ہے، اس لئے ہم اچھے تعلقات بنا سکتے ہے۔

سفیر نے پاکستانی پاسپورٹ کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ اسے یاد ہے اس نے اپنے ایک پاکستانی دوست کا پاسپورٹ دیکھا تھا جس میں لکھا تھا کہ وہ پاسپورٹ اسرائیل کے علاوہ باقی تمام ممالک کے لئے کار آمد ہے۔ اس نے مزید کہا کہ امید ہے پاکستان کا پاسپورٹ جلد اسرائیل کے لئے بھی کارآمد ہوگا۔

Advertisement

ایک سوال کے جواب میں، امریکہ میں تعینات اسرائیل کے سفیر نے کہا کہ اگر پاکستان کے لوگ اسرائیل میں آکر عبادت کرنا چاہتے ہے تو ہم اس کے لئے کوئی نا کوئی حل نکال لے گے۔

اسرائیل کے سفیر نے کہا کہ ایسا پہلے بھی ہو چکا ہے، جب میرا پاکستانی دوست میری شادی پر اسرائیل آیا تھا۔ سفیر کا کہنا تھا کہ اس نے اپنے پاکستانی دوست کو اسرائیل لانے کے لئے تمام تعلقات بروئے کار لائے۔ اور پھر وہ میرے شادی پر آنے کے بعد سب سے پہلے مسجد اقصیٰ میں عبادت کرنے گیا۔

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *