خواجہ آصف کو پکڑنے کی اصل وجہ سامنے آگئی، حامد میر بھی چُپ نہ رہ سکے۔

     

    سیالکوٹ (نیوز ڈیسک) خواجہ آصف کو مورخہ 29 دسمبر 2020 بروز منگل کی شب، مسلم لیگ نواز کے سیکرٹری احسن اقبال کے گھر سے واپسی پر پکڑ لیا گیا۔

     

    Advertisement

    تفصیلات کے مطابق، قومی احتساب بیورو مسلم لیگ نواز کے اہم رکن خواجہ آصف کو لے کر راولپنڈی نیب کے دفتر میں منتقل کر دیا۔ جبکہ مسلم لیگ نواز کی نائب صدر مریم نواز نے اسے پکڑنا نہیں بلکہ ا غو ا کرنے کا الزام لگا دیا۔

     

    قومی احتساب بیورو کے مطابق، خواجہ آصف کو لے کر جانے کی وجہ یہ بیان کی گئی کہ آصف صاحب کے ذرائع سے زیادہ اثاثے ہے، جن کا وہ جواز پیش نہیں کر سکے۔ اس سلسلے میں ان کی انکوائری چل رہی تھی۔ جس کے بعد یہ پیش رفت سامنے آئی۔

    Advertisement

     

    جبکہ جیو نیوز کے اینکر پرسن حامد میر کا کہنا ہے کہ خواجہ صاحب مسکراتے ہوئے گئے ہے، اور مسکراتے ہوئے واپس آئے گے۔

     

    Advertisement