حکومت نے پاکستانیوں کے اور مشکلات پیدا کر دی، جانئے مزید تفصیلات

وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اعلان کیا کہ حکومت نے مسلم لیگ (ن) کی سابقہ ​​حکومت سے وراثت میں ملنے والے خسارے پر قابو پانے اور صنعتی پہیے کو حرکت میں رکھنے کے لئے بجلی کے نرخوں میں ایک روپے 95 پیسے کا اضافہ کیا ہے۔

 

بجلی کے شعبے میں پی ٹی آئی کی حکومت کی دو بڑی کامیابییں 50 فیصد پرانے ، غیر فعال سرکاری بجلی گھروں کی ریٹائرمنٹ اور آئی پی پیز کے ساتھ معاہدے ہیں ، جس سے آئندہ دو دہائیوں میں بجلی کے شعبے پر 800 ارب روپے سے زیادہ کا بوجھ کم ہوگا۔

Advertisement

 

نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) کے نوٹیفکیشن جاری کرنے کے بعد یہ نئے نرخ لاگو ہوں گے۔

 

Advertisement

مزید پڑھیے: بجلی کے بحران سے بچنے کے لیے کراچی والوں کا بہترین قدم۔ سب کے لئے مثال قائم کردی

 

عمر ایوب نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کی حکومت کے غلط فیصلے بجلی کے نرخوں میں اضافے کا سبب ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت کوویڈ 19 کے دوران مالی مشکلات سے دو چار رہی اس لیے بجلی کے نرخوں میں اضافہ ناگزیر تھا لیکن حکومت نے پھر بھی گذشتہ سال بجلی کے شعبے کو 473 ارب روپے کی سبسڈی دی۔

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *