جسٹس قاضی نے دوران سماعت کہا کیا تھا؟َ تحریک انصاف خد ہی پھنس گئی، تحلکہ خیز انکشافات۔۔

    جسٹس قاضی نے دوران سماعت کہا کیا تھا؟َ تحریک انصاف خد ہی پھنس گئی، تحلکہ خیز انکشافات۔۔

     

     

    Advertisement

    اسلام آباد (نیوز ڈیسک) چیف جسٹس آف سپیریم کورٹ پاکستان جسٹس گلزار احمد سمیت جسٹس موشیر عالم، جسٹس عمر عطا بندیال، جسٹس قاضی فیض عیسٰی اور جسٹس اعجاز احسن نے وزیراعظم کے خلاف ایک مقدمہ کی سماعت کی۔ جس میں وزیراعظم عمران خان پر الزام لگایا ہے کہ انہوں نے سینٹ الیکشن سے پہلے اپنی مرضی کے پارٹی ممبران کو سرکاری فنڈ دیا۔

     

     

    Advertisement

     

    جس کے بعد، چیف جسٹس گلزار احمد نے جسٹس قاضی فیض عیسی کو یہ مقدمہ سماعت کرنے سے روک دیا کیونکہ جسٹس قاضی نے اپنی ذاتی حیثیت سے وزیر اعظم عمران خان کے خلاف پہلے درخواست دے رکھی ہے۔ یہ انصاف کا تقاضا ہے کہ جسٹس قاضی وزیر اعظم عمران خان کے خلاف کوئی مقدمہ بطور جج نا سنے۔

     

    Advertisement

     

    دوسری طرف ریحام خان نے ٹوئٹر پر انکشاف کیا ہے کہ جسٹس قاضی نے دوران سماعت یہ بتایا کہ انہیں واٹس ایپ پر کچھ دستاویزات موصول ہیں۔ جس میں بتایا گیا ہے کہ این اے 65 کے رکن کو فنڈ دیئے گئے ہیں۔

     

    Advertisement

     

    جبکہ این اے 65 تالہ گنگ/ چکوال سے ایم این اے اُس جماعت کا ہے، جو وزیراعظم عمران خان کے مطابق پنجاب کے سب سے بڑے چور وغیرہ ہے۔

     

    Advertisement