کیا میاں بیوی جنت میں اکھٹے رہ سکیں گے۔۔ اور عورت پہلے شوہر کے ساتھ رہے گی یا دوسرے کے ساتھ۔۔ اہم پیغام

کیا میاں بیوی جنت میں اکھٹے رہ سکیں گے اور عورت پہلے شوہر کے ساتھ رہے گی یا دوسرے کے ساتھ ؟

 

 

Advertisement

علماءکرام نے بتایا کہ جی ہاں کے یہ بات بلکل ٹھیک ہے میاں بیوی جنت میں اکھٹے ہوں گئے نہ صرف وہ بلکہ ان کے بچے بھی ان کے ساتھ جنت میں ہونگے۔ اگر شوہر پرہیزگار ہے تووہ سیدھا جنت میں جائے گا اور اس کی نیکیوں کے بدلے میں الّٰلہ تعالٰی اس کی بیوی اور بچوں کو بھی اس کے ساتھ جنت میں بھیجیں گے۔

 

 

Advertisement

یہ نہیں ہوگا کہ اگر شوہر کے درجات زیادہ ہیں تو وہ بہت اونچے درجے پر چلا گیا اور اس کی بیوی بچے کم درجے کے ساتھ نچلے درجے پہ رہ گئےہیں، نہیں! ایسا بلکل نہیں۔

 

 

Advertisement

شوہر کے ساتھ اس کے بیوی بچے بھی جنت کے اسی مقام پہ جائیں گے جدھر شوہر ہوگا۔ اور دوسری صورتحال میں اگر بیوی گنہگار ہے تو اپنے گناہ کی سزا کو بھگتنے کے بعد وہ اپنے شوہر کے ساتھ اور بچوں کے ساتھ جنت میں ہوگی، یہ سب الّٰلہ تعالٰی کی اس پہ خاص کرامت ہے۔

 

ایک اور بھی صورتحال ہے کہ اگر عورت بہت گنہگار ہے مطلب کہ اس نے الّٰلہ کے نبی کو ماننے سے انکار کر دیا یا پھر الّٰلہ کی ذات میں کسی کو شریک ٹھہرایا ہے تو پھر وہ معافی کے لائق نہیں

Advertisement

 

 

اور پھر اس طرح وہ جنت میں داخل نہیں ہو سکتی اور سوال کے دوسرے حصے کا جواب منددرجہ ذیل ہے کہ اگر عورت نے اپنے پہلے شوہر سے طلاق لے لی یا پھر دوسری شادی کر لی یا پھر اس کے شوہر کا انتقال ہوگیا ہے تو وہ اسی شوہر کے ساتھ جنت میں رہے گئ جس کے نکاح میں اس کی جان نکلے گی۔

Advertisement

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *