کھانے میں کیڑے کیوں پڑتے ہیں، حضرت علی (رض) نے فرمایا۔

ایک شخص حضرت علی رضی اللہ عنہ کی خدمت میں حاضر ہو کر پوچھتا ہے کہ اللہ نے ہمارے لیے اتنی نعمتیں عطا کی ہیں ان میں اناج، پھل اور سبزیاں وغیرہ ہیں لیکن یہ رکھنے کے بعد ان میں کیڑے کیوں پڑھ جاتے ہیں؟

 

 

Advertisement

حضرت علی رضی اللہ عنہ نے جواب دیا کہ شکر کرو کھانے پینے کی چیزوں میں کیڑے پڑھ جاتے ہیں ، کھانے پینے کی چیزوں میں کیڑے پڑھنا بھی اللہ کی ہی ایک نعمت ہے۔

 

 

Advertisement

اس پر اس شخص نے پوچھا کہ کھانے پینے کی چیزوں میں کیڑے پڑھنا کونسی نعمت ہے؟ حضرت علی رضی اللہ عنہ نے جواب دیا کہ اے شخص اگر کھانے پینے کی چیزوں میں کیڑے نہ پڑھتے تو یہ امیر لوگ جو سونا چاندی جمع کرتے ہیں۔

 

 

Advertisement

یہ اناج ، سبزیاں اور دنیا جہان کے میوے بھی اپنے پاس جمع کرتے اور جس طرح سے غریب سونا چاندی کو دیکھنے سے ترستا ہے ویسے ہی غریب اناج،سبزیاں اور میوے کھانے کو بھی ترستا۔ اسی لیے اللہ نے اناج کے وجود میں کیڑے پیدا کر دیے تاکہ کوئی بھی کھانے پینے کی چیزوں کو ذخیرہ نہ کر سکے۔

 

 

Advertisement

Recent Posts