مقام ابراہیمؑ کی ایمان کو تازہ کر دینے والی کہانی

جب حضرت ابراہیمؑ کو اللہ تعالیٰ کا حکم ہوا کہ خانہ کعبہ کی تعمیر کریں تو حضرت ابراہیمؑ نےاللہ تعالیٰ کے حکم سے خانہ کعبہ کی تعمیر شروع کی۔ تعمیر کرتے کرتے جب خانہ کعبہ کی دیواریں حضرت ابراہیمؑ کے سر سے اونچی ہوگئیں اور آپؑ کے لئے مسجد میں پتھر لگانا مشکل ہوگیا تو اس وقت حضرت ابراہیمؑ کے لئے ایک معجزے کا نزول ہوا جو کہ ایک پتھر کی شکل میں تھا جس کو مقامِ ابراہیمؑ کہا جاتا ہے۔ یہ ایک مقدس پتھر ہےجو کعبہ سے چند گز کی دوری پر رکھا گیا ہے۔ یہ وہی پتھر ہے کہ جب حضرت ابراہیمؑ کعبہ کی تعمیر فرما رہے تھے تو آپؑ نے اس پتھر پر کھڑے ہو کر دیواریں تعمیر کیں۔ یہ پتھر موم کی طرح نرم ہوگیا اور آپؑ کے دونوں پیروں کا اس پتھر پر گہرا نشان پڑگیا۔

اس پتھر کا یہ بھی معجزہ ہے کہ جب حضرت ابراہیمؑ اس پر کھڑے ہو جاتے تو یہ پتھر خود بہ خود ہوا میں اُڑنے لگتااور خانہ کعبہ کی دیواروں کی طرف ہو جاتا۔ اس طرح حضرت ابراہیمؑ آسانی کے ساتھ مسجد پر پتھر لگاتے جاتے۔اور خانہ کعبہ کی تعمیر فرماتے جاتے۔آپؑ کے مبارک پیروں کی فضیلت سے اس پتھر پر چار چاند لگ گئے کہ اس پتھر کا اللہ نے قرآن میں بھی 2 مرتبہ ذکر بھی فرمایا ہے۔

Advertisement

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں