کیا واش روم میں وضو کرتے ہوئے بسمہ اللہ یا کوئی اور کلمات پڑھنا جائز ہیں، حقیقت جانئے۔۔

مفتی محمد قاسم عطاری بتاتے ہیں کہ اگر واش روم میں واش بیسن اور فلش وغیرہ واش روم میں ایک ساتھ ہوں تو وہاں پر وضو کرتے وقت بسمہ اللہ یا کوئی آیت وغیرہ نہیں پڑھی چاہئے کیونکہ ناپاکی کی جگہ ایک ساتھ ہی ہے۔

ایسی جگہ پر بسمہ اللہ، دعائیں، ازکار وغیرہ نہیں پڑھنی چاہئیں۔ مفتی صاحب کہتے ہیں کہ واش روم میں داخل ہونے سے پہلے بسمہ اللہ پڑھیں پھر اندر جائیں اور وضو پڑھیں اور باہر نکل کر دعا پڑھیں۔

مفتی صاحب کہتے ہیں کہ اگر یہ صورت ہے کہ واش روم کے اندر فلش اور واش بیسن کے درمیان میں ایک دیوار ہو خواہ وہ سیمنٹ کی دیوار ہو یا لکڑی کی دیوار ہو بس اس طرح سے دونوں چیزیں حقیقت میں الیحدہ نظر آئیں تو وہاں پر دونوں حصے جدا ہو جاتے ہیں۔ یہاں پر بسمہ اللہ یا دعائیں وغیرہ پڑھی جاسکتی ہیں۔

Advertisement

مفتی صاحب کہتے ہی کہ کئی لوگ واش روم میں جا کر وضائف نہیں پڑھتے کہ وہاں پڑھنا جائز نہیں اور اس طرح سے ثواب سے بھی محروم ہو جاتے ہیں تو اس لئے واش روم میں کوشش کرنی چاہئے کہ واش بیسن اور فلش کے درمیان ایک دیوار ہو تاکہ وضو کرتے ہوئے وضائف پڑھ کر ثواب حاصل کیا جاسکے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *