سندھ میں ملازموں کے لئے بڑی خبر آگئی

کوویڈ 19 کے قطرے پلانے سے انکار کرنے والے سرکاری ملازمین کو تنخواہ نہیں دی جائیں گی۔

وزیراعلیٰ مراد نے وزارت خزانہ کو جولائی سے غیر پابند ملازمین کی تنخواہوں کو روکنے کی ہدایت کی۔

محکمہ صحت سندھ کے مطابق ، صوبے میں اب تک 1،550،553 افراد کو قطرے پلائے جاچکے ہیں۔
صوبائی ٹاسک فورس نے وبائی امراض کی تازہ ترین صورتحال کا جائزہ لیا۔

Advertisement

کراچی (اسٹاف رپورٹر) وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے حکام کو ہدایت کی ہے کہ وہ سرکاری ملازمین کی تنخواہیں بند کریں جو خود کو کورونا وائرس سے بچاؤ کے قطرے نہیں پلا رہے ہیں۔

چیف منسٹر کی زیر صدارت کورونا وائرس ٹاسک فورس کے اجلاس کے دوران ، صوبے میں کورونا وائرس کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا اور صوبے میں ویکسینیشن کے مجموعی اعدادوشمار کا بھی جائزہ لیا گیا۔

وزیراعلیٰ مراد نے کہا کہ غیرسرکاری سندھ حکومت کے ملازمین کو تنخواہ جاری نہیں کی جانی چاہئے اگر وہ کورونا وائرس سے بچاؤ کے قطرے نہیں لیتے ہیں اور اس سلسلے میں وزارت خزانہ کو ہدایات جاری کیں۔

Advertisement

محکمہ صحت سندھ کے مطابق ، صوبے میں اب تک 1،550،553 افراد کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلائے جاچکے ہیں ، جبکہ 1،121،000 افراد کو پہلی خوراک ملی ہے اور 429،000 افراد کو اس وائرس کے خلاف مکمل طور پر ویکسین پلائی جاچکی ہے۔

اجلاس کو بتایا گیا کہ سندھ میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 78،799 افراد کو قطرے پلائے گئے۔

این سی او سی کے مطابق ، اب تک ملک بھر میں 79.53 ملین سے زائد افراد کو قطرے پلائے جاچکے ہیں۔ قومی کورونا وائرس مانیٹرنگ باڈی نے رواں سال ملک میں 70 ملین افراد کو قطرے پلانے کا ہدف مقرر کیا ہے۔

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *