بجلی کی قیمتوں میں مزید اضافہ، نواز حکومت عوام کو لے ڈوبی

    بجلی کی قیمتوں میں مزید اضافہ۔

     

     

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

     

    حکومت کی جانب سے عوام کو آئے روز مسائل کا سامنا ہے مہنگائی پر موجودہ حکومت کا کوئی قابو نہیں رہا۔ آئے روز قیمتوں میں اضافہ پریشان کن ہے۔

     

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

     

     

    نیپرا کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق سینٹرل پاور پرچیزنگ ایجنسی کی جانب سے اگست کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی مہنگی کرنے کی درخواست کی گئی ہے۔

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

     

    اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ  سی پی پی اے کی جانب سے 22 پیسے فی یونٹ بجلی مہنگی کرنے کا کہا گیا ہے اس حوالےسے سماعت 29 ستمبر کو کی جائے گی۔

     

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

     

     

    نیپرا کے اعلامیے میں کہا گیا ہے  کے الیکڑک کے علاوہ سب کمپنیوں کی بجلی مہنگی کرنے کی درخواست دی گئی ہے۔

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

    پہلے بجلی کے بلوں میں ون سلیب بینیفٹ کو ختم کرکے صارفین کو بھاری بل بھیجا جا رہا ہے ۔ اس پر بجلی  قیمت اضافے کے بعد مہنگائی کی نئی لہر آئے گی۔

     

     

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

     

    سی پی پی اے کے مطابق اگست میں 13 ارب 63 کروڑ 87 لاکھ کی یونٹ بجلی پیدا کی کئی ہے جس کی پیداواری لاگت 10 روپے 11 پیسے فی یونٹ ہے

     

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

     

     

    گزشتہ ماہ اگست کے ریفرینس فیول لاگت بھی 9 روپے 89 پیسے مقرر کی گئی تھی جو کہ وزیراعظم کے حکم پر  ختم کی گئی۔ اب  واپڈا کی جانب سے   فیول ایڈجسٹمٹ دوبارہ وصول کیا جائے گا ۔

    Advertisement