ہلنے جلنے سے لاچار طلال چوہدری ہسپتال سے فرار۔ پولس کے آنے پہ خالی کمرے کے علاوہ کچھ نہ ملا۔ ہسپتال کا بل بھی ادا نہ کیا۔

    ایک سینئر پولیس آفیسر کی سربراہی میں فیکٹ فائنڈنگ کمیٹی پاکستان مسلم لیگ نواز (مسلم لیگ ن) کی رہنما طلال چوہدری کے بیان کو ریکارڈ کرنے کے لئے لاہور میں نیشنل اسپتال پہنچی

     

    جہاں طلال چوہدری کا علاج ہورہا تھا ، جہاں وہ اپنا بیان ریکارڈ کرا رہے تھے ، لیکن اسپتال میں ایک خالی کمرے کے علاوہ کچھ نہ ملا کیونکہ طلال چوہدری پہلے ہی بل کی ادائیگی کے بغیر جلدی میں اسپتال سے چلے گئے تھے۔

    Advertisement

     

    میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اے ایس پی عبدالخالق نے بتایا کہ اسپتال کے عملے نے پولیس کو بتایا ہے کہ چوہدری کو ایک گھنٹہ پہلے ہی چھٹی دے دی گئی تھی۔

     

    Advertisement

    ذرائع ک مطابق طلال چوہدری ہسپتال سے سیدھا اسلام آباد گئے ہیں۔

    اے ایس پی نے کہا کہ وہ جلد سے جلد اس سے رابطہ کریں گے اور ان کا بیان ریکارڈ کریں گے۔

     

    Advertisement

    اسی دن پولیس نے فیصل آباد میں ایم این اے عائشہ رجب علی کی رہائش گاہ کا بھی دورہ کیا تاکہ طلال چوہدری پر ان کے ذریعہ لگائے گئے ہراساں کیے جانے والے الزامات کی تحقیقات کی جاسکے لیکن وہ بھی اسلام آباد روانہ ہو چکی ہیں۔