حکومت کا سرکاری ملازمین کے خلاف حکم نامہ جاری، ملازمین ہوشیار رہیں، کہیں نوکری سے ہاتھ نا دھو بیٹھیں۔

    لاہور ( نیوز ڈیسک) مورخہ 10 فروری کو  سرکاری ملازمین اور حکومت کے درمیان معاملات خراب ہوئے، لیکن حکومت نے سرکاری ملازمین کے خلاف کوئی کسر نہیں چھوڑی۔

     

    تفصیلات کے مطابق، مورخہ 10 فروری 2021 کو صوبائی حکومت پنجاب نے نوٹیفیکیشن جاری کیا، جس میں پنجاب میں موجود تمام سرکاری ملازمین کو انتباہ کیا گیا کہ دفتروں میں سے ملازمین کوئی بھی غیر حاضر نا ہو، کیونکہ ملازمین کی غیر حاضری کو اسلام آباد میں ہونے والے احتجاج کی وجہ سمجھا جا رہا ہے۔

    Advertisement

     

    ملازمین کی غیر حاضری کو روکنے کے لئے ایس اینڈ جی اے ڈی کے ڈپٹی سیکرٹری حافظ عرفان حمید کو فوکل پرسن بنایا گیا ہے تاکہ انہیں ملازمین کی غیر حاضری کی بارے میں بروقت اطلاع دے کر کاروائی بروئے کار لائی جائے۔

     

    Advertisement

    آپ کو بتاتے چلیں یہ افسران بالا وہ لوگ ہیں، جنہیں نے راتوں رات 150 فیصد ایگزیکٹو الاؤنس منظور کروایا تھا اور کسی کو خبر بھی نہیں ہوئی تھی۔ جبکہ ملازمین کی تنخواہوں میں اضافوں کی صورت میں ان کے پیٹ میں مڑور اٹھ رہے ہیں۔

     

    مزید یہ بات بھی قابل غور ہے کہ حکومت نے انسانی حقوق کو پس پشت رکھ کر یہ نوٹیفیکیشن کیا، جس پر جتنی بھی تنقید کی جائے کم ہے۔

    Advertisement

     

    آپ سے درخواست ہے کہ اس پوسٹ کو فرض سمجھ کر زیادہ سے زیادہ شئیر کرے تاکہ حکومت کے غیرقانونی قدم کی سرزنش کی جائے۔

     

    Advertisement