گھر کا واحد کفیل ہو، گھر چار بہنیں اور والدین ہیں، مگر پولیس والے نے….

    لوگوں کو جیسے مرنا بھول گیا ہو، ہر طرف نفسانفسی کا عالم چھایا ہوا ہے اور لوگ اس دُنیا میں فرعون بنے پھرتے، جنے اس بات کا بھی یقین نہیں کہ وہ اگلے ہی لمحے سانس بھی لے سکے گے کا نہیں۔ ایسی ہی ایک مثال ملتی ہے ہمیں لاہور کی تحصیل راونڈ میں۔

     

    تفصیلات کے مطابق، ریڑھی لگانے والے نے آپنی ہی ریڑھی کو سرکاری ملازموں سے تنگ آ کر آگ لگا دی۔ اُس کا کہنا کا تھا ریڑی لگانے کے بھی پیسے دینے پڑتے ہے، ورنہ سرکاری اہلکار تنگ کرتے ہیں، وہ گھر کا واحد کفیل ہے، اُ س کے گھو چار بھنیں اور والدین ہیں، جن کی دیکھ بھال وہ خد کرتا ہے۔ اور ڑیڑھی لگا کر ضروریات زندگی پوری کر رہا ہے۔ مگر وارڈن کے تنگ کرنے کی وجہ سے اُس نے احتجاجا ریڑی کو آگ لگا دی۔

    Advertisement

     

    مزید پڑھیے: جن عورتوں میں یہ نشانیاں ہوں وہ بہت ہی بابرکت ہوتی ہیں، جہاں ملیں فوراً سے شادی کر لیں۔

     

    Advertisement

    رائیونڈ کے بھٹی چوک پر ریڑھی بان نے ٹریفک وارڈن سے تنگ آکر اپنی ریڑھی کو آگ لگا دی۔ ریڑھی بان نوجوان نے الزام لگایا ہے کہ ٹریفک وارڈن ریڑھی لگانے کے پیسے طلب کر تا ہے۔ انکار پر مختلف طریقوں سے تنگ کرتا ہے۔ وارڈن پورے چوک میں صرف مجھے ہی تنگ کرتا ہے، جس سے تنگ آکر احتجاجاً یہ انتہائی اقدام کیا ہے ۔

     

    نوجوان نے حکام بالا سے صورتحال کانوٹس لینے کی اپیل کی ہے اور ایسے کرپٹ افسران کے خلاف سخت اقدام لینے کے درخواست کی ہے جو ادارہ کا نام بدنام کر رہے ہیں۔

    Advertisement

     

    مزید پڑھیے: ’’میری کیا اُوقات کہ میں اللہ پاک کے حکم کے آگے کچھ کہوں۔‘‘ معروف پاکستانی خاتون اینکر نے شوہر کو دوسری شادی کی اجازت دے دی

    Advertisement