سرکاری ہپستال میں ڈاکٹر نے انوکھا کارنامہ انجام دے دیا، آپریشن کے دوران مریض کے اندر ایسی چیز بھول گئے کہ اللہ نے ہی رکھا اسے بس۔

    لیہ ، سرکاری ہسپتال کے ڈاکٹر کا کارنامہ  ، آپریشن کے دوران قینچی  اندر ہی چھوڑ دی۔

     

     

    Advertisement

     

     

    جہاں پر ڈاکٹر زندگی بچانے کے لئے   مشہور ہیں وہیں پر کچھ  ایسےبھی لاپرواہ ہیں جو کہ انسان کی زندگی کو ہی داؤ پر لگا دیتے ہیں۔

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

    ایسے ہی  لیہ میں سرکاری ہسپتال میں ہوا ۔ لیڈی ڈاکٹر نے دوران آپریشن مریضہ کے پیٹ میں ہی اوزار چھوڑ دیا۔

     

     

    Advertisement

     

     

    اس غفلت اور غیر ذمہ دارانہ رویے سے   خاتون نے زندگی داؤ پر لگ گئی۔  طبعیت زیادہ خراب ہونے پر جب خاتون کا سی ٹی اسکین کروایا تو قینچی کی موجودگی کا پتہ چلا۔

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

     

    ڈسٹرکٹ ہیڈ کواٹر ہسپتال   میں دوبارہ آپریشن کر کے  قینچی نکال کر مریضہ کی زندگی بچا لی گئی۔

     

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

    خاتون کے والد یونس سے  بتایا کہ گائنا کالوجسٹ نجمہ بتول نے آج سے 70 روز قبل ان کی بیٹی کا آپریٹ کیا جس کی فیس بھی 40 ہزار روپے وصول  کی گئی تھی۔

     

     

    Advertisement

     

     

    واقعے کے حوالے  تا حا ل کسی بھی قسم کا مقدمہ درج نہیں کیا گیا   جس کی وجہ سے  خاتون کےا ہل خانہ نے عدالت سے رجوع کیا۔

    Advertisement

     

     

     

    Advertisement

     

    اہل خانہ نے وزیر اعلیٰ پنجاب ، ہیلتھ کئیر کمیشن اور وزیر صحت سے مطالبہ کیا ہے کہ ان کے ذمہ داران کے خلاف باقاعدہ کاروائی کریں۔

     

    Advertisement