جاپان کے وزیر اعظم کا بڑا فیصلہ۔ جاپان میں کھلبلی۔ پوری دنیا کی نظر جاپان پر۔

    ٹوکیو (اعتماد نیوز) جاپان کے سب سے طویل عرصے تک بطور وزیر اعظم خدمات انجام دینے والے وزیر اعظم، طبیعت خراب ہونے کی وجہ سے اپنے عہدے سے سبکدوش۔

    مزید پڑھیں: عمران کان کا بڑا معرکہ، دُنیا نے بھی عمران خان کو مان لیا. لبنان نے شاندار اعلان کر دیا.

    خبررساں ادارے الجزیرہ کے مطابق، جاپان کے وزیر اعظم شنزو آبے نے اعلان کیا ہے کہ وہ اپنی ذمہ داریوں سے سبکدوش ہو جائے گے۔ انکا بطور وزیر اعظم دورہ، تقریباً سات سال اور آٹھ مہینے کا رہا۔

    Advertisement

    وزیر اعظم آبے نے جمعہ کو ایک نیوز کانفرنس میں اپنے استعفے کا اعلان کیا ہے، جس میں انہوں نے حالیہ بگڑتی ہوئ اپنی صحت کے بارے میں بتایا۔ 65 سالہ عمر کے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ وہ اپنی بگڑتی ہوئی حالت کی وجہ سے حکومت کے لئے مشکلات پیدا نہیں کرنا چاہتے۔

    مزید پڑھیں: بو م بوم آفریدی نے ایسا کارنامہ کر دیا جو حکومت نہ کر سکی

    انھوں نے اپنے بیانیہ میں کہا کہ وہ آپنے اپنی عہدے سے سبکدوش ہو جائے گے۔ کیونکہ انھیں ایک بیماری ہے، جسکی وجہ سے انھے حکومتی معاملات چلانے میں دشواری پیش آرہی ہے۔ اور وہ نہیں چاہتے کے حکومت کو انکی وجہ سے کسی بھی قسم کا نقصان پہنچے۔

    Advertisement

    وزیر اعظم کافی عرصہ سے السرٹ کولائٹس کی بیماری سے لڑ رہے ہے۔ اور حال میں ایک ہی ہفتہ کے اندر دو دفعہ اہسپتال جانے سے یہ سوالات اٹھے ہیں کہ آیا وہ حکمران پارٹی کے رہنما کی حیثیت سے اپنی ملازمت کے اختتام تک ملازمت میں رہ سکتا ہے؟

    مزید پڑھیں: نکاح کے دوران مولوی کی غیر اخلاقی حرکت کی اصل کہانی سامنے آگئی۔۔

    انھون نے آپنے بیانیہ میں عوام الناس سے مخلصانہ معافی مانگتے ہوئے، آپنی ذمہ داریوں سے سبکدوش ہونے کا بتایا۔ انکا اس عہدے کا دورانیہ ختم ہونے میں صرف ایک سال باقی رہ گیا تھا۔ انھون نے مزید کہا کہ ابھی بہت سے پالسیز زیر غور تھی، جن کو مکمل کرنا تھا مگر موجودہ صحت کی وجہ سے انھے جانا پڑا۔

    Advertisement

    حکومتی پاڑٹی کے آدمی نے بتایا کہ آبے کی طبعیت بلکل ٹھیک ہے لیکن گزشتہ اہسپتال کے دورہ سے عوام میں یہ افواہ پیدا ہو گئ کہ وزیراعظم اپنی ذمہ داریاں ادا کرنے کے لئے نااہل ہو گئے ہے۔

    مزید پڑھیں: مردوں کے گلے کی ہڈی کیوں نکلی ہوتی ہے اور اس کا مقصد کیا ہے

    آبے نے 2012 کے آخر میں اپنا دوسری مرتبہ عہدہ سنبھالا اور پیر کے روز 2799 دن دفتر میں بطور وزیراعظم کام کرتے ہوئے مکمل کئے۔
    اس طراح سب سے طویل وزیراعظم کا دور مکل کرکے آبے نے آپنے انکل کا ریکاڈ تورا دیا۔

    Advertisement

    لیکن یہ بات قابل ذکر ہے کہ حال ہے میں ہونے والے ایک سروے میں پتہ چلا ہے کہ انھوں تقریباً 30 پرسنٹ اپنی مقبولیت کھو دہی ہے۔ اسکی وجہ کرونا وائرس سے نمپٹنے کے لئے غیر مناسب احتیاطی تدابیر اور اقدام ہے۔ اور مزید حکومت کے حالیہ کچھ سکینڈل بھی اسکی وجہ بنے۔

    مزید پڑھیں: پاکستان کا ایسا شہر جو پُراسرار طور پر تباہ۔

    آبے نے حکومتی انتظامی امور میں سب سے زیادہ توجہ ملک کی معاشی حلات کو بہتر کرنے میں دی۔ اس کے ساتھ انھوں نے ملٹری کا بجٹ بھی بڑھا دیا تھا، البتہ وہ امن و سکون کے ہامی تھے۔

    Advertisement

    آبے کا اس طراح استعفیٰ دینے سے حکومتی پاڑٹی، جو کہ لبرل ڈیموکریٹک پاڑٹی ہے، میں نئے وزیراعظم بننے کی دور لگ گئ ہے۔ جو نیا وزیراعظم بنے گا، وہ مجودہ حکومت کا باقی کا دور پورہ کرے گا، جو کہ تقریباً ایک سال کا ہے۔

    آبے کو بچپن سے ہی معدہ اور آنتریوں کی زخموں کی بیماری ہے۔ اور اس سے مسلسل لڑ رہے ہے۔ لیکن حالیہ صحت کی صورت حال نے انکے لئے مشکالات پیدہ کر دی جاکی وجہ سے انھوں نے استعفیٰ کا بڑا فیصلہ کیا۔

    Advertisement