ملک میں رات 11 بجے سے صبح 6 بجے تک کرفیو، حالات تشویش ناک

    ملک میں کرونا وائرس کے بگڑتے حالات کی وجہ سے، سپین کے وزیراعظم نے ملک بھر میں کرفیو نافذ کر دیا۔ یہ نوبت اس وجہ سے آئی کیونکہ پوری دنیا میں پھر سے کرونا پھیلا رہا ہے۔ یہ خدشہ کیا جا رہا ہے کہ پوری دنیا میں کرونا کی دوسری فیز آرہی ہے۔

     

     

    Advertisement

    سوشلسٹ کے ہامی وزیراعظم نے ٹیلی وزن کے ذریعہ بتایا کہ ملک میں غیر معمولی اقدامات کرونا سے نمٹنے کے لئے کئیے جا رہے ہیں۔ اس نے مزید بتایا کہ یہ اقدامات کا اطلاق اتوار کی رات سے ہو گا۔

     

     

    Advertisement

    انھوں نے مزید بتایا کہ یورپ اور سپین میں کرونا کی دوسری لہر آرہی ہے، جس کی وجہ سے احتیاطی تدابیر اور حفاظتی تدابیر کرنا ضروری ہے، یہ کہنا تھا سپین کے وزیر اعظم کا۔

     

     

    Advertisement

    وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ملک کی صورت حال بگھرنے سے بچمے کے لئے ملک میں ایمبرجنسی کا اطلاق کیا جا رہا ہے۔ جو کہ 11 بجے رات سے صبح 6 بجے تک کیا جائے گا۔ اس ایمبرجنسی کا اطلاق کنیری آئلینڈ میں نہیں ہو گا۔