حکومت کا عوام کو پھر سے بڑا دھچکا، پیٹرول کی قیمت بڑی سطح تک بڑھانے کا فیصلہ

آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے 16 فروری سے پیٹرول کی قیمت میں 16 روپے فی لیٹر اضافے کی تجویز پیش کی۔

آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے پٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں سے متعلق اپنی سمری وزارت کو ارسال کردی ہے۔

Advertisement

اوگرا نے تیز رفتار ڈیزل پر 14 روپے فی لیٹر اضافے کی تجویز پیش کی ہے۔

Advertisement

اس معاملے سے قبل ذرائع نے بتایا تھا کہ اوگرا نے 30 روپے فی لیٹر کی بنیاد پر اپنی سمری تیار کی ہے۔ فی الحال ، پیٹرول پر محصول 21.04 روپے فی لیٹر ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ رواں ماہ کے باقی دنوں میں پٹرول کی قیمت میں 5.50 Rs اور ڈیزل 5.75 Rs روپے تک اضافے کا امکان ہے۔

Advertisement

اوگرا کی سمری جو نئی شرحوں کی تجویز کرتی ہے ، وزیر اعظم کی منظوری کے بعد 16 فروری سے نافذ ہوگی۔

Advertisement

یکم فروری کو وفاقی حکومت نے وزیر اعظم عمران خان کی منظوری کے بعد پٹرول ، ڈیزل اور دیگر مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا اعلان کردیا تھا۔

وزیر اعظم نے پیٹرول پر 2.70 روپے فی لیٹر اور ڈیزل پر 2.88 روپے فی لیٹر اضافے کی منظوری دی تھی۔ مٹی کے تیل کی قیمت میں 3.54 روپے فی لیٹر تک اضافہ کیا گیا ہے جبکہ لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 3 روپے فی لیٹر تک اضافہ کردیا گیا ہے۔

Advertisement

فی الحال ، پاکستان میں پٹرولیم کی قیمتیں مندرجہ ذیل ہیں۔
Petrol: Rs111.90
Diesel: Rs116.07
Kerosene oil: Rs80.19
Light diesel oil: Rs79.23

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

حکومت کا عوام کو پھر سے بڑا دھچکا، پیٹرول کی قیمت بڑی سطح تک بڑھانے کا فیصلہ” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں