حکومت نے ایک اور پہاڑ عوام پر گرا دیا، قیمتوں میں پھر سے اضافہ، جانئے نئی قیمتیں۔

    یوٹیلیٹی اسٹورز کارپوریشن کے ذرائع نے بتایا کہ ملک میں پام آئل کی قیمتوں میں عالمی سطح پر اضافے کے باعث ملک میں کھانے کے تیل کی قیمتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔

     

    تفصیلات کے مطابق رمضان میں، گندم کا آٹا، چاول، چین اور مختلف دالیں اور دال سمیت سبسڈی کے نرخوں پر 19 ضروری مصنوعات دستیاب ہوں گی۔

    Advertisement

     

    ذرائع کا کہنا ہے کہ گھی اور ککنگ آئل کی قیمتوں میں اضافے سے سبسڈی کی وجہ سے کم ریٹس پر دستیاب دیگر رعایتی اشیا کی عکاسی نہیں ہوگی۔

     

    Advertisement

    عام مارکیٹ میں قیمتوں میں اضافے کے بعد یوٹیلٹی اسٹوروں پر بھی اشیائے خوردونوش مہنگا کرنے کی تیاریاں جاری ہیں۔

     

    نوٹیفکیشن کے مطابق ، گھی کی شرح میں فی کلو 48 روپے کا اضافہ کردیا گیا ہے، جس سے فی کلو کی نئی قیمت 251 روپے ہوگئی ہے۔ کھانا پکانے کے تیل کی قیمت 29 روپے فی کلو کردی گئی ہے۔ فی کلو کھانا پکانے کے تیل کی نئی قیمت پہلے 244 روپے سے 273 روپے ہوگئی ہے۔

    Advertisement

     

    شیمپو کی بوتلوں پر 10 سے 20 روپے کا اضافہ کیا گیا ہے جبکہ چائے بنانے کا پاؤڈر پر 21 سے 32 روپے تک ریٹ بڑھا دیا گیا ہے۔

     

    Advertisement