فرانسیسی سفیر کو ملک بدر کرنے پر بلاول زرداری کا سخت ردعمل سامنے آگیا، وجہ بھی بتا دی۔۔

فرانسیسی سفیر کو ملک بدر کرنے سے متعلق قرارداد پاس کرنے کے لئے قومی اسمبلی کا اجلاس طلب کیا گیا ہے جس سے پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) نے اس سے دور رہنے کا فیصلہ کیا ہے۔

 

 

Advertisement

ذرائع نے بتایا کہ اپوزیشن پارٹی نے پارلیمنٹ کے آج اجلاس کے بائیکاٹ کا فیصلہ کیا۔ اس نے فیصلے کے بارے میں اپنے ممبران کو آگاہ کردیا تھا۔

 

 

Advertisement

ذرائع کا کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی کی قیادت نے پارٹی کے سینئر ممبروں سے مشاورت کے بعد یہ فیصلہ کیا ہے۔

 

 

Advertisement

پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے ٹویٹ کیا کہ حکومت کالعدم مذہبی جماعت کے ساتھ معاہدہ قومی اسمبلی میں نہیں لائی، حکومت نے سڑکوں پر کارروائی کی، پھر پابندی عائد، لوگوں کی جانوں کو نقصان پہنچا، 500 سے زائد پولیس اہلکار زخمی ہوئے، انٹرنیٹ بند ہوا، وزیر اعظم نے نیشنل اسمبلی میں کوئی بیان نہیں دیا، کسی بھی مرحلے پر اسمبلی کو اعتماد میں نہیں لیا۔ اب پی ٹی آئی نیشنل اسمبلی کے پیچھے چھپنا چاہتی ہے۔ بلاول بھٹو نے مزید کہا کہ یہ گڑبڑ وزیر اعظم سے ہوئی ہے وہ اسے صاف کریں یا گھر جائیں۔

 

 

Advertisement

توقع ہے کہ حکومت فرانسیسی سفیر کی ملک بدر ہونے کے بارے میں ایک قرارداد پیش کرے گی۔

 

 

Advertisement

یہ اجلاس 22 اپریل (جمعرات) کی دوپہر 2 بجے تک کے لئے ملتوی کردیا گیا تھا لیکن اسمبلی سیکرٹریٹ کے مطابق حکومت نے مذہبی جماعت کے ساتھ حکومت کی بات چیت کے تناظر میں دو دن قبل اس میعاد کو دوبارہ طے کرلیا ہے۔

 

 

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *