Headlines

    اگر آپ کو غصہ زیادہ آتا ہے تو جانئے آپ کا غصہ کس قسم کا ہے اور اس سے بچنا کیسے ہے

    غصہ کی حالت میں ہمارے جسم میں ایک اینڈالین ہارمون بنتا ہے جس سے ہمارے غصے والی کیفیت نمودار ہوتی ہے غصے کی حالت میں مسلز ٹائٹ ہو جاتے ہیں بلڈ پریشر بڑھ جاتا ہے پسینہ آنا اور دل کی دھڑکن بڑھ جانا، منہ اور کانوں یا آنکھوں کا سُرخ ہو جانا سب غصے کی وجہ سے ہیں۔

     

     

    Advertisement

    غصے جب تک قدرتی طور پر آئے تو وہ نقصان دہ نہیں ہے لیکن جب یہ کنٹرول سے باہر ہو جائے تو اس سے خطرہ ہوتا ہے۔ جس کی وجہ سے ہماری روزمرہ زندگی متاثر ہوتی ہے۔ غصے کی تین حالتیں بہت اہم ہیں۔

     

    1) Out word
    2) In word
    3) Passive

    Advertisement

     

    غصے کی پہلی حالت میں انسان غصے کا اظہار چیخ چلا کر یا پیٹ کر کرتا ہے۔

     

    Advertisement

    دوسری حالت میں غصے کو اپنے اندر رکھتا ہے اور بَڑ بڑاتا ہے۔ خود سے باتیں کرتا ہے۔

     

    تیسری حالت میں انسان نہ تو چیخ چلا کر اظہار کر تا ہے نہ ہی خود سے بَڑ بڑاتا ہے بلکہ اس کو اپنے اندر دبا لیتے ہیں جو کہ بعض اوقات رونے کی وجہ بنتا ہے جس کی وجہ سے انسان ڈیپریشن کا شکار ہو جاتا ہے۔

    Advertisement

     

    غصے کو کم کرنے کے لئے اسلام نے جو احکام دئیے ہیں اُن پر عمل کرنا چاہییے مطلب کھڑے ہو تو بیٹھ جاؤ، پانی پیو۔ ان سب وجوہات سے انسان کی توجہ اس غصے والی کیفیت سے ہٹ جاتی ہے۔

     

    Advertisement

     

    اس کے علاوہ یوگا کی کچھ ورزش بھی اس حالت کو بدلنے میں مددگار ثابت ہوتی ہیں جیسے کے سیدھے بیٹھ کر لمبے لمبے سانس ناک کے ذریعے لینا اور منہ کے ذریعے آہستہ آہستہ نکالنا۔

     

    Advertisement

     

    اپنے غصے کو قابو میں کرنے کے لئے کسی اچھے سائیکیٹریک سے مشورہ کر کے اپنے رویہ کو تبدیل کریں۔ تیسری چیز ادویات ہیں جو کہ ڈیپریشن کے مریض کو دی جاتی ہیں۔

     

    Advertisement